Sunday, 27 February 2011

روزنامچہ

اتنے بہت سے دنوں میں بہت سا لکھنا تھا لیکن فرصت نایاب ہوتی جا رہی ہے۔ پچھلے دن بہت مصروف گزرے۔ سیدہ شگفتہ سے ملاقات کے بعد مزید چند معروف شخصیات سے ملاقات ہوئی۔ ان میں Islam: A Short History کی مصنفہ کیرن آرمسٹرانگ کے ساتھ ایک شام اور سینٹ جوزف کالج کراچی کی پرنسپل ڈاکٹر برنیڈٹ ڈین سے دس دن تک روزانہ ملاقات شامل رہی۔ اتنا کچھ نیا سیکھا اور اسے آگے پھیلانے کا ارادہ بھی ہے۔ حقیقی زندگی میں اس پر کام شروع ہو چکا ہے۔ انٹرنیٹ کے لئے ابھی وقت نہیں مل رہا۔ بہرحال کوشش جاری ہے۔
فی الحال صبح ایک نہایت اہم میٹنگ کم امتحان ہے جس کے لئے دعاؤں کی اشد ضرورت ہے۔ یہی دعا کر رہی ہوں کہ اللہ تعالیٰ ہمیشہ کی طرح عزت رکھ لے۔ آمین

6 comments:

  • ابن سعید says:
    27 February 2011 at 22:09

    اللہ ہمیشہ سے بہتر انداز میں آپ کو عزت بخشے۔ آمین۔

  • فرحت کیانی نے لکھا :۔
    27 February 2011 at 22:14

    آمین۔ بہت شکریہ :)

  • ابوشامل says:
    28 February 2011 at 10:45

    دعائیں ہی دعائیں ہیں جی۔ بس اور سب کچھ چاہے تو چھوڑ دیجیے گا لیکن کیرن آرمسٹرانگ کے ساتھ گزاری گئی شام کا احوال ضرور بیان کیجیے گا۔

  • خدا کامیاب کرے۔ آمین

  • محب علوی says:
    1 March 2011 at 14:05

    امید ہے اب تک امتحان میں سرخرو ہو چکی ہوں گی

    اور ایک عدد پوسٹ سیکھنے سکھانے کے متعلق آ رہی ہوگی

  • فرحت کیانی نے لکھا :۔
    8 March 2011 at 23:41



    ابوشامل: دعائیں ہی دعائیں ہیں جی۔ بس اور سب کچھ چاہے تو چھوڑ دیجیے گا لیکن کیرن آرمسٹرانگ کے ساتھ گزاری گئی شام کا احوال ضرور بیان کیجیے گا۔  



    بہت شکریہ فہد :) ۔ کیرن آرمسٹرانگ کے بارے میں تو ضرور لکھنا ہے انشاءاللہ پہلی فرصت میں۔



    جاوید گوندل ۔ بآرسیلونا ، اسپین: خدا کامیاب کرے۔ آمین  



    بہت شکریہ :) ۔ ابھی نتیجہ نہیں ملا لیکن اپنی طرف سے سب کچھ اچھا ہو گیا الحمد اللہ۔




    محب علوی: امید ہے اب تک امتحان میں سرخرو ہو چکی ہوں گیاور ایک عدد پوسٹ سیکھنے سکھانے کے متعلق آ رہی ہوگی  



    بہت شکریہ :) ۔ سرخروئی کا تو ابھی معلوم نہیں ہو سکا لیکن امتحان اچھا ہو گیا اللہ کے کرم سے۔
    پوسٹ آ رہی ہے انشاءاللہ بس کچھ ہی دیر باقی ہے۔

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔