Friday, 2 January 2009

چوہے کا بچہ!

نئے سال کی پہلی پوسٹ بچوں کے لئے اردو اینی میشنز کے بارے میں ہے۔ عمار اور شعیب سعید شوبی نے دوسری نظم بھی بہت ہی خوب پیش کی ہے ماشاءاللہ   :clap میں نے صبح دیکھی تھی یہ ویڈیو اور سارا دن چوہے کا بچہ ہی ذہن میں گھومتا رہا :D



ویسے عمار مجھے نہیں معلوم تھا کہ آپ بھی گاتے  ہو   :)

نظم مزے کی ہے۔ بس  بیچارہ چوہے کا بچہ آخر میں مرحوم ہو گیا :cry:

اور بلی کے مزے ہو گئے  :party

حالانکہ جیری تو اتنی آسانی سے کبھی ٹام کے ہاتھ نہیں  آیا :D

8 comments:

  • عبدالقدوس says:
    2 January 2009 at 10:39

    :ainko زبردست ہے

    عبدالقدوس’s last blog post..سالِ نو

  • عمار ابنِ ضیاء says:
    2 January 2009 at 12:10

    بہت شکریہ فرحت۔ آپ کی حوصلہ افزائی سے ہمت بڑھتی ہے۔ :) اور میری گلوکاری کے جوہر تو آپ نے دیکھے ہی نہیں ہیں۔ محفل پر اپنی آواز میں گانے پوسٹ کر کر کے سب کو بیزار کردیا تھا۔ :P

    جیری اگرچہ اتنے آرام سے ٹام کے ہاتھ میں نہیں آتا لیکن اس نظم کی شاعرہ صاحبہ شاید چوہے کے بچے کی ستائی ہوئی تھیں اس لیے اس کو بلی کے ہاتھوں پکڑواکر مرحوم کردیا۔ :haha:

    عمار ابنِ ضیاء’s last blog post..چوہے کا بچہ

  • شعیب سعید شوبی says:
    2 January 2009 at 16:55

    بہت شکریہ فرحت آپ کا!۔۔۔۔آپ کی حوصلہ افزائی سے یقینا ہمت بڑھتی ہے۔ :)

    باقی رہی مرحوم چوہے والی بات تو اس کے لئے اس نظم کی خالق ’’عائشہ عالم‘‘ ذمہ دار ہیں جنھوں نے اپنی اس نظم میں جیری کے بالکل برعکس چوہے کی ’’مظلومانہ ‘‘ عکاسی کی ہے۔ ہم نے تو محض کہانی کی ’’ڈیمانڈ‘‘ کے مطابق اینی میشن تیار کی ہے۔ :funny

    شعیب سعید شوبی’s last blog post..چوہے کا بچہ (متحرک نظم)

  • فرحت کیانی نے لکھا :۔
    3 January 2009 at 01:51

    @عبدالقدوس:
    :)
    @عمار:
    تو میں پہلی ہی فرصت میں وہ گانے ڈھونڈوں اب :D چلیں کسی صورت چوہا پکڑا تو گیا ناں ورنہ ٹام کو تو ہمیشہ ناکامی ہی ہوتی ہے :D
    آپ لوگ اتنا اچھا کام کر رہے ہیں تو سراہا جانا بھی ضروری ہے :)

    @شعیب سعید شوبی:
    اینی میشن تو بہت خوب ہے شوبی :)۔ یوں ہی اچھا اچھا کام کرتے رہیں :)
    وہ تو میں نے نظم کی بات کی تھی کہ بالآخر اونٹ پہاڑ کے نیچے آ ہی گیا اور جیری کا کزن پکڑا گیا :D

  • آن لائن اخباری رپوٹر says:
    5 January 2009 at 13:25

    ہاہاہا مجھے بھی بیچارے چوہے کے بچے پہ بہت ترس آیا اور شوبی بھائی کی "سفاقی" سے بیت ڈر لگا! ہاہاہاہا :haha:

  • فرحت کیانی نے لکھا :۔
    5 January 2009 at 22:56

    بیچارہ چوہا :D
    سفاک تو بلی تھی اور باقی کام شاعرہ کا تھا ناں

  • آن لائن اخباری رپوٹر says:
    9 January 2009 at 15:09

    ہاہاہا لیکن بقول شوبی بھائی کے کہ انھوں نے تو بس "جھاڑو" مارا ہے۔ لیکن بسمہ اللہ تو کر دی نہ! ہاہاہا :smile

  • فرحت کیانی نے لکھا :۔
    12 January 2009 at 09:34

    :D اور راہ عمار نے دکھائی۔

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔