Saturday, 23 August 2008

ماضی حال ساتھ ساتھ

کتنی بار ایسا ہوتا ہے کہ جس کام کے لیے میں نیٹ آن کرتی ہوں وہ وہیں کا وہیں رہ جاتا ہے اور میں کہاں سے کہاں پہنچ جاتی ہوں۔ :)
ایسے ہی کچھ دن پہلے ہوا جب کلک کلک کھیلتے میں ایک جگہ پہنچی جہاں لوگ 'تب' اور 'اب' کے بیچ حائل برسوں کے فرق مٹانے کی کوشش کر رہے تھے۔ :D

تب




اب




۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


تب





اب



۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔



تب



اب



کتنے سارے لوگوں کا ماضی اورحال یہاں موجود ہے۔


آئیڈیا مجھے بہت مزے کا لگا۔ اور میں نے سوچا ہے کہ اس بار میں نے گھر جا کر پرانی البمز کھولنی ہیں اور سب کو کم از کم ایک بار 'تب' اور 'اب' ضرورکِھلانا ہے۔ :D


5 comments:

  • ڈفر says:
    24 August 2008 at 14:31

    والدین کے بعد پرانی یادیں سب سے قیمتی اثاثہ ہوتی ہیں
    کم از کم میرے لئے تو ایسا ہی ہے۔

  • Virtual Reality says:
    24 August 2008 at 22:56

    بجا کہا۔ انسان کا سب سے قیمتی اثاثہ والدین اور پرانی یادیں ہی ہوتی ہیں۔ :)

  • ساجداقبال says:
    26 August 2008 at 12:10

    میرا خیال ہے کہ آپ کی پیدائش پاکستانی کی ہوگی تو تب سے اب ملانے کیلیے پھر سے پاکستان آنا ہو گا۔

  • Virtual Reality says:
    27 August 2008 at 21:29

    جی ساجد! میں پکی والی پاکستانی ہوں۔ اور سال میں کم از کم ایک ڈیڑھ مہینہ تو پاکستان میں ہی گزرتا ہے :) امید ہے جلد ہی اب اور تب کو ملانے کا موقع ملے گا انشاءاللہ :) :)

  • بچپن vs پچپن says:
    17 September 2008 at 19:33

    [...]  بچپن میں ٹی وی پر کسی کو کہتے سنا تھا کہ انگریز اور پٹھان دونوں ایک جیسے ہیں یعنی اول الذکر اور آخر الذکر دونوں صرف اس وقت خوبصورت ہوتے ہیں جب تک کہ بچے ہوتے ہیں ۔ ۔ ۔ تب سے یہی سوال تھا ذہن میں کہ پھر بڑے ہو کر کیا ہو جاتے ہیں ۔ ۔ ۔ اس کی ایک جھلک تو فرحت نے دکھائی ہے اول الذکر کا بچپن اور پچپن ڈھونڈ کر [...]

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔